مزید خبریں

Jamaat e islami

قومی اسمبلی: عمران خان کیخلاف قرارداد پیش کردی گئی

اسلام آباد ( نمائندہ جسارت) قومی اسمبلی میں پی ٹی آئی چیئرمین عمران خان کے ایٹمی پروگرام اور پاک فوج سے متعلق انٹرویو کے خلاف قرارداد پیش کردی گئی۔وفاقی وزیر سردار ایاز صادق نے قومی اسمبلی میں عمران خان کے خلاف قرار داد پیش کی۔قرارداد میں کہا گیا کہ پاک فوج کی دفاع کے لیے ناقابل تسخیر خدمات ہیں، یہ ایوان پی ٹی آئی کے چیئرمین کے انٹرویو اور الفاظ کی شدید مذمت کرتا ہے۔قرارداد میں مزید کہا گیا کہ سابق وزیراعظم نے کہا اسٹیبلشمنٹ نے درست فیصلے نہ کیے تو پاکستان 3 ٹکڑے ہوجائے گا، یہ ایوان عمران نیازی کے بیان کی مذمت کرتا ہے۔قرارداد کے متن میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ پاک فوج نے دہشت گردی کے خلاف عظیم قربانیاں دیں، یہ ایوان انہیں خراج تحسین پیش کرتا ہے۔قرارداد کے متن میں کہا گیا کہ ریاست سابق وزیراعظم عمران خان کے خلاف سپریم کورٹ سے رجوع کرے۔اس دوران سردار ایاز صادق نے کہا کہ پاک فوج نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں بے شمار جانوں کا نذرانہ پیش کیا، عمران خان کا اقتدار کیا گیا یہ ہر روز نئی بات کرتے ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ معلوم نہیں عمران خان نے دنیا میں کس کس کو راز دے دیے ہوں گے، لگتا ہے جو پاکستان کے خلاف نقشے بنائے گئے اس میں بھی یہ شامل تھے۔وفاقی وزیر نے یہ بھی کہا کہ عمران خان نے پاکستان کے 3 ٹکڑوں کی بات کرکے اس کی تائید کی ہے، ملک کے ایٹمی پروگرام کی بنیاد ذوالفقار علی بھٹو نے رکھی اور اسے تکمیل تک نواز شریف نے پہنچایا، بعد میںعمران خان کے ایٹمی پروگرام، پاک فوج سے متعلق بیان پرقومی اسمبلی میں قرارداد پیش کی گئی ،قرارداد میں کہا گیا کہ پاک فوج کی دفاع کے لیے ناقابل تسخیر خدمات ہیں، یہ ایوان پی ٹی آئی کے چیئرمین کے انٹرویو اور الفاظ کی شدید مذمت کرتا ہے۔قرارداد میں مزید کہا گیا کہ سابق وزیراعظم نے کہا اسٹیبلشمنٹ نے درست فیصلے نہ کیے تو پاکستان 3 ٹکڑے ہوجائے گا، یہ ایوان عمران نیازی کے بیان کی مذمت کرتا ہے۔قرارداد کے متن میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ پاک فوج نے دہشت گردی کے خلاف عظیم قربانیاں دیں، یہ ایوان انہیں خراج تحسین پیش کرتا ہے۔قرارداد کے متن میں کہا گیا کہ ریاست سابق وزیراعظم عمران خان کے خلاف سپریم کورٹ سے رجوع کرے۔وفاقی وزیر نے یہ بھی کہا کہ عمران خان نے پاکستان کے 3 ٹکڑوں کی بات کرکے اس کی تائید کی ہے،وفاقی وزیر سردار ایاز صادق نے قومی اسمبلی کے اجلاس میں پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین اور سابق وزیراعظم عمران خان کا انٹرویو پڑھ کر سنا دیا۔ایوان میں خطاب کے دوران سردار ایاز صادق نے کہا کہ عمران خان کا انٹرویو پڑھ کر سنانا چاہتا ہوں، پی ٹی آئی چیئرمین نے کہا اسٹیبلشمنٹ نے درست فیصلے نہ کیے تو فوج تباہ اور ایٹمی پروگرام خطرے میں پڑ جائے گا۔انہوں نے کہا کہ عمران خان اقتدار سے نکلنے کے بعد بوکھلا گیا ہے، اُس نے پاکستان کے 3 ٹکرے ہوجانے کی بات کردی ہے۔وفاقی وزیر نے مزید کہا کہ اس مسئلے پر ایوان میں قرار داد لانا چاہتا ہوں، اس پر اپوزیشن سے بھی دستخط کرائوں گا۔اُن کا کہنا تھا کہ پی ٹی آئی چیئرمین یہودیوں کی الیکشن مہم چلاتے رہے ہیں، انہوں نے میئر لندن کے لیے ایک یہودی کے حق میں مہم چلائی۔سردار ایاز صادق نے یہ بھی کہا کہ پاکستان کے ٹوٹنے کے کچھ نقشے بھی چلتے رہے ہیں، پوچھنا تھا کہ کیا ان کے پیچھے یہی تو نہیں تھے؟انہوں نے کہا کہ ایٹمی پروگرام پر کوئی برا وقت آیا تو پوری قوم حفاظت کے لیے کھڑی ہوجائے گی، عمران خان فوج کو تب ہی درست سمجھتے ہیں جب اقتدار میں رہیں۔وفاقی وزیر نے کہا کہ جو عمران خان کے خلاف قرارداد پر دستخط نہیں کرے گا، وہ پی ٹی آئی چیئرمین کے موقف کو درست سمجھتا ہے۔