مزید خبریں

Jamaat e islami

سری لنکا، معاشی بحران کے باعث مسلمان حج سے محروم

کولمبو (انٹرنیشنل ڈیسک) سری لنکا میں معاشی بحران کے باعث رواں سال مسلمان حج کی سعادت حاصل کرنے سے محروم رہیں گے۔ حکومت نے کٹھن حالات میں دیگر اقوام سے اظہار یکجہتی کے نام پر ایک ہزار 585افراد کو فریضے کی ادائیگی سے روک دیا ہے۔ خبررساں اداروں کے مطابق نیشنل حج کمیٹی نے ٹور آپریٹرز ایسوسی ایشن اور مسلم مذہبی اور ثقافتی امور کے محکمے سمیت کئی دیگر جماعتوں کی بات چیت کی جس کے بعد فیصلہ کیا گیا ہے کہ سری لنکا کے موجودہ معاشی حالات ٹھیک نہیں اس لیے کوئی بھی مسلمان حج نہیں کر سکے گا۔ حج ٹور آپریٹرز ایسوسی ایشن کے صدر سعید ایم رسمی نے اپنے بیان میں کہا کہ یہ فیصلہ مسلم برادری کے ارکان کی طرف سے ملک کی خاطر کیا گیا ہے تاکہ مشکل وقت میں قوم سے یکجہتی کا مظاہرہ کیا جاسکے۔ انہوں نے کہا کہ ملک کو اس وقت سنگین بحران کا سامنا ہے جس پر قابو پانے کے لیے زیادہ سے زیادہ غیر ملکی کرنسی کی ضرورت ہے۔ ہماری کوشش ہے مسلمان اس کٹھن وقت میں حکومت کا ساتھ دیں۔ واضح رہے کہ سعودی حکومت 2022 ء کے لیے سری لنکا سے ایک ہزار 585 عازمین کو حج کوٹے کی منظوری دے چکی ہے۔ دوسری جانب سری لنکا کے نئے پبلک ایڈمنسٹرپریانتا مایادونے کہا ہے کہ ملک قحط کے دہانے پر پہنچ چکا ہے۔ حالات اتنے خراب ہیں کہ حکومت کے پاس سرکاری ملازمین کو تنخواہ دینے کے لیے پیسے نہیں ہیں۔ریٹائرڈ ملازمین کو پنشن نہیں مل رہی ہے ۔