مزید خبریں

اسرائیل غزہ کو صفحہ ہستی سے مٹانے پر تلا ہوا ہے، شجا ع الدین

حیدرآباد (نمائندہ جسارت)حماس کے سربراہ اسماعیل ہنیہ کے تین بیٹوں کو خاندان سمیت شہید کر دیا گیا۔ اسرائیل نے ایک مرتبہ پھر واضح کر دیا ہے کہ وہ غزہ پر ہولناک بمباری بند کرنے پرآمادہ نہیں۔یہ بات تنظیم اسلامی کے امیر شجاع الدین شیخ نے ایک بیان میں کہی۔ انہوں نے کہا کہ حقیقت یہ ہے کہ اسرائیل سرزمینِ غزہ کو صفحہ ہستی سے مٹانے پر تلا ہوا ہے۔ اسرائیل کے اعلی عہدیدار کھلم کھلا دھمکی دے رہے ہیں کہ نہ صرف غزہ بلکہ مغربی کنارے سے بھی فلسطینیوں کا صفایا کر دیا جائے گا اور جس مسلمان ملک میں بھی حماس کی قیادت و رہنما موجود ہیں ان کی ٹارگٹ کلنگ کی جائے گی۔ مسلمان ممالک کو اب فیصلہ کرنا ہو گا کہ کیا وہ گیدڑ کی طرح ذلت و رسوائی کی زندگی گزارتے رہیں گے یا بہادری سے لڑتے ہوئے اسرائیلی درندگی اور غنڈہ گردی کا دندان شکن جواب دیں گے۔اسماعیل ہنیہ کے خاندان نے ہزاروں فلسطینی مسلمانوں کی طرح جام شہادت نوش کر کے اخروی کامیابی حاصل کر لی ہے اور غزہ کے غیور مسلمانوں کا خون اسرائیل کیخلاف تحریکِ مزاحمت کو نئی طاقت اور قوت بخشے گا ان شا اللہ! حقیقت یہ ہے کہ اسماعیل ہنیہ اور غزہ کے تمام مجاہدین و عوام کا اپنے پیاروں کی شہادتوں پر مثالی صبر و ضبط، استقامت، عزم مصمم اور شجاعت امتِ مسلمہ کیلئے قابل تقلید ہے۔دوسری طرف57 مسلمان ممالک ایک بڑی فوج اور ہر قسم کے جدید اسلحہ کے حامل ہیں لیکن دنیا کی محبت اور موت کے خوف نے انہیں بزدل بنا رکھا ہے۔ان کی بزدلی اور کم ہمتی کا یہ عالم ہے کہ اسرائیلی مظالم کے خلاف کھل کر آواز بلند کرنے کو بھی تیار نہیں۔ انہوں نے کہا کہ مسلمان ممالک متحد ہو کر اسرائیل کے لیے اپنی زمینی، بحری اور فضائی حدود کی بندش، سفارتی تعلقات کے خاتمے، اسرائیل نواز کمپنیوں کی مصنوعات کے مکمل اور مستقل بائیکاٹ اور تجارتی پابندیوں کے ذریعے اسرائیل اور اس کے پشتی بانوں کو سبق سکھا سکتے ہیں۔