مزید خبریں

Jamaat e islami

میٹرو ول تھرڈ میں رہائشی پلاٹوں پر غیر قانونی تعمیرات عروج پر

کراچی (رپورٹ: محمدانور ) نگراں دور حکومت میں شہر میں خلاف قانون تعمیرات کا سلسلہ میٹرو ول تھرڈ تک پہنچ گیا۔ سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کی عدم دلچسپی کی وجہ سے گلشن اقبال ٹاؤن میٹرو ول تھرڈ میں رہائشی پلاٹوں پر غیر قانونی تیزی سے مکمل کی جارہی ہے اس ضمن میں مقامی رہائشیوں کی شکایات کا بھی نوٹس نہیں لیا جارہا ہے۔ علاقے کے رہائشی محمد عادل خان نے ڈائریکٹر جنرل سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کو 31 اکتوبر کو ایک تحریری درخواست میں شکایت کی تھی کہ میٹرو ول تھرڈ کے رہائشی پلاٹوں کے مکانات نمبر این 252 اور 251 پر بلڈرز مافیا غیر قانونی پورشنز اور دکانیں تعمیر کررہے ہیں جس کے باعث علاقے کے لوگوں میں تشویش پائی جاتی ہے۔ لوگوں کا کہنا ہے کہ رہائشی علاقے میں خلاف قانون تعمیرات کی وجہ سے پانی سیوریج اور سوئی گیس کی فراہمی کے مسائل میں اضافہ ہوگا لہٰذا ان غیر قانونی تعمیرات کو فوری روکا جائے۔تقریباً ایک ماہ قبل دی جانے والی درخواست پر ایس بی سی اے نے کوئی کارروائی نہیں کی۔ لوگوں نے کہا کہ نگراں حکومت اپنی ذمے داری پوری کرتے ہوئے ان تعمیرات کو فوری طور پرمنہدم کرنے کے احکامات جاری کرے۔