مزید خبریں

ٹنڈو جام ،پیپلزپارٹی کیخلاف پورے سندھ میں احتجاج

ٹنڈوجام(نمائندہ جسارت)پورے سندھ میں جے یو آئی کا پیپلزپارٹی کے خلاف احتجاج میونسپل کارپوریشن ٹنڈوجام پیپلزپارٹی کا چیئرمین کی جوڑی جے یو آئی کے تعاون سے بلا مقابلہ کامیاب یہ جے یو آئی کی مقامی سطح کی سیاسی مفاہمت ہے سندھ میں بلدیاتی الیکشن میں بدترین دھاندلیوں کے خلاف ہمارا احتجاج جاری رہے گا۔ تفصیلات کے مطابق میونسپل کارپوریشن ٹنڈوجام کی یوسی نمبر 56 میں پیپلز پارٹی کے چیئرمین حاجی اکبر ٹگر اور وائس چیئرمین شفقت شاہ کھڑے تھے ان کے مقابلے پر جمعیت علماء اسلام فضل الرحمان گروپ کے حیدرآباد تعلقہ کے امیر چیئرمین اور عبیداللہ تالپوروائس چیئرمین کھڑے تھے اور توقع کی جاری رہی تھی کہ یہاں پر پیپلزپارٹی کو سخت مقابلے کا سامنا ہو گا دوسری جانب پیپلز پارٹی کے خلاف جے یو آئی کا پورے سندھ میں احتجاج اور دھرنا اور زرداری بھگائو سندھ بچائو مہم کو دیکھ کر یہ ہی سمجھا جارہا تھا کہ یہاں پر اب کانٹے کا مقابلہ ہو گا لیکن جس وقت راشد محمود سومرو جے یو آئی سندھ کے جنرل سیکرٹری پیپلز پارٹی کی بلدیاتی الیکشن میں بدترین دھندلیوں کے خلاف دھرنا دے کر بیٹھے تھے میو نسپل کارپوریشن ٹنڈوجام میں پیپلز پارٹی اور جے یو آئی میںمعاہدہ طے پا گیا اور پیپلز پارٹی کی چیئرمین کی جوڑی کے سامنے سے جے یو آئی تعلقہ حیدرآباد کے امیر حافظ سعید نے بیٹھنے کا اعلان کر دیا اس کے بارے میں جب صوبائی رہنما جمعیت علماء اسلام سندھ تاج محمد ناھیوں سے معلوم کیا گیا تو انہوں نے کہا کہ پیپلزپارٹی کی بلدیاتی الیکشن میں بدترین دھندلیوں کے خلاف ہمارا احتجاج پورے سندھ میں جاری ہے میونسپل کارپوریشن ٹنڈوجام میں پیپلز پارٹی ہونے والا معاہدہ سیٹ ایڈ جسٹمنٹ ہے اور پہلے کیے گئے معاہدے کا نتیجہ ہے جس کی وجہ انہوں نے پیپلز پارٹی کے اُمیدواروں کے سامنے ہاتھ اُٹھایا ہے لیکن اس کے باوجود ہماری تحریک پیپلز پارٹی کے خلاف بھر پور طریقے سے جاری رہے گی ذرائع سے معلوم ہوا پیپلز پارٹی اس کے بدلے میں جے یوئی کو ایک یا دو کونسلر کی سیٹیں دے گی جے یو آئی کے نمائندے 57,66,64 میں کھڑے ہیں اس طرح پیپلز پارٹی میو نسپل کارپوریشن ٹنڈوجام کی 16 یونین کونسلوں میں سے ابھی تک 4 یونین کونسلوں میں بنا مقابلہ کامیابی حاصل کر چکی ہے اور 12 یونین کونسلوں میں 2 کے علاوہ مضبوط پوزیشن میں ہے ۔