مزید خبریں

حکومتی سبسڈی کے بغیر زرعی اجناس عام آدمی کی پہنچ سے دور ہوں گی

ملتان (کامرس ڈیسک) نامور ماہر معیشت اور زکریایونیورسٹی کے شعبہ سوشل سائنسز کے استاد ڈاکٹرفہدقریشی نے کہاہے کہ اگرحکومت سبسڈی نہ دے توزرعی اجناس عام آدمی کی پہنچ سے دورہوجائیں۔دنیا بھرمیں گند م کاآٹابہت مہنگاہے ہم نے اسے سبسڈی دے کر اسے سستارکھاہواہے۔ڈاکٹرفہد قریشی نے کہاکہ اگرہم اس کی برآمدشروع کردیں تو کسان بہت خوشحال ہوجائے اوراس کے وارے نیارے ہوجائیں لیکن مقامی ضرورت پوری کرنے کے لیے اس کی برآمد کی اجازت نہیں۔ڈاکٹرفہد قریشی نے کہاکہ کاٹن کے حوالے سے بھی کاشتکاروں کو مجبورکیاجاتاہے کہ وہ مل مالکان کو سستے داموں کپاس فراہم کریں تاکہ ہماراٹیکسٹائل سیکٹرفعال رہے ورنہ عالمی منڈی میں تو کپاس کی بہت قیمت ہے۔انہوں نے کہاکہ تاجروں پرٹیکس توان کی مشاورت سے لگائے جاتے ہیں لیکن کیا کبھی تنخواہ دار طبقے سے بھی کسی نے مشاورت کی۔انہوں نے کہاکہ ریٹیلرپرصرف تین سے دس ہزار روپے تک ٹیکس لگایاگیاہے ،عام سرکاری ملازم تواس سے زیادہ ٹیکس دے دیتاہے۔ڈاکٹرفہدقریشی نے مزید کہاکہ حکومت کوان 80لاکھ افرادپرہاتھ ڈالناچاہیے توٹیکس دینے کی صلاحیت تورکھتے ہیں لیکن ابھی تک ٹیکس نیٹ میں نہیں آئے۔