مزید خبریں

ڈرائی پورٹ پر کسٹم کو دفتر کے لیے زمین فراہم کرنے کا مطالبہ

پشاور(کامرس ڈیسک)آل پاکستان کسٹم ایجنٹس ایسوسی ایشن کے چیئرمین قمر الاسلام نے کسٹم کلکٹریٹ کے عہدیداروں اور سرحد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری (SCCI) کے ممبران سے ملاقات کے لیے پشاور کا دورہ کیا تاکہ ملک کے درآمد کنندگان اور برآمد کنندگان کو درپیش مسائل کے حل پر بات چیت کی جا سکے ، پاکستان کسٹم ایجنٹس ایسوسی ایشن کے خیبر پختونخوا چیپٹر کے چیئرمین اور پاک افغان جوائنٹ چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری (PAJCCI) کے نائب صدر ضیاء الحق سرحدی نے قمر الاسلام کا استقبال کیا، ماڈل کلکٹریٹ کسٹمز پشاور کے دورے کے دوران انہوں نے چیف کلکٹر کسٹمز احمد رضا خان سے ملاقات کی اور تاجر برادری خصوصاً درآمد کنندگان اور برآمد کنندگان کو کراچی اور سرحدی چوکیوں پر درپیش مسائل کے بارے میں خیالات کا اظہار کیا۔اجلاس کے دوران گفتگو کرتے ہوئے ضیاء الحق سرحدی نے مشتبہ سامان کی چیکنگ کے لیے کسٹم کلکٹریٹ پشاور میں لیبارٹری قائم کرنے کا مطالبہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ لیبارٹری کی سہولت نہ ہونے کی وجہ سے جن تاجروں کا سامان چیکنگ کے لیے رکھا جاتا ہے انہیں دوسرے شہروں میں چیکنگ یا پی سی ایس آئی آر کو ادائیگی کی بنیاد پر بھیجنا پڑتا ہے ، قمرالاسلام اور ضیا ء سرحدی نے مختلف امورکے لیے کسٹم کلیئرنگ ایجنٹس کو پشاور کلکٹریٹ میں دفتر کے لیے جگہ فراہم کرنے کا بھی مطالبہ کیا۔انہوں نے مزید کہا کہ اسی طرح کی سہولیات طورخم میں نیشنل لاجسٹک سیل (NLC) کے زیر تعمیر ٹرمینل پر بھی فراہم کی جانی چاہئیں۔ اس موقع پرچیف کلکٹریٹ کسٹمز نے جلد از جلد مطالبات کو پورا کرنے کی یقین دہانی کرائی اورکہا کہ اضا خیل ڈرائی پورٹ پر کسٹم کلیئرنگ ایجنٹس کو دفتر کے لیے جگہ فراہم کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ کسٹم کلیئرنگ ایجنٹس کی سہولت کے لیے این ایل سی سے بھی رابطہ کیا جائے گا تاکہ وہ ذہنی آسانی کے ساتھ کام انجام دے سکیں، کسٹم کلیئرنگ ایسوسی ایشن کے عہدیداروں نے کلکٹر کسٹمز اپریزمنٹ امجد رحمان اور ڈائریکٹر ٹرانزٹ قیصر حمید سے بھی ملاقات کی۔