مزید خبریں

حیدرآباد ،گرڈ اسٹیشن پر حملہ آوروں کو گرفتار کیا جائے،عبداللطیف

حیدرآباد(اسٹاف رپورٹر)سخی عبدالوہاب شاہ گرڈ اسٹیشن پر دہشت گرد عناصر کا حملہ حیسکو ملازمین کو اغوا کرکے یرغمال بنانے اوراربوں روپے سے نو تعمیر شدہ گرڈ اسٹیشن کے نظام کو تباہ کرنے کی دھمکی ، مذکورہ علاقے سے حیسکو کا 50KVA ٹرانسفارمر کی چوری کرلینا حیدرآباد کی ضلعی اور حیسکو انتظامیہ کیلیے لمحہ فکریہ اور خطرناک عمل ہے ملازمین کو سیفٹی اور سیکورٹی فراہم کی جائے دہشت گردی کے اس واقعے کے باعث ملازمین میں خوف اور عدم تحفظ کا احساس پیدا ہورہا ہے جو کسی طور بھی ادارے اور ملازمین کیلیے اچھا عمل نہیں دہشت گردی کے اس واقعے کا فوری سدِباب اور ملوث عناصر کے خلاف عملی کارروائی عمل میں لائی جائے بصورت دیگر ہم گرڈ اسٹیشن بند کرنے پر مجبور ہونگے ۔ ان خیالات کا اظہار آل پاکستان واپڈا ہائیڈرو الیکٹرک ورکرز یونین (CBA) کے مرکزی صدر عبداللطیف نظامانی نے 132 کے وی گرڈ اسٹیشن سخی عبدالوہاب شاہ پر دہشت گردی کے اس واقعے پر گرڈ اسٹاف سے اظہار یکجہتی کے موقع پر خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر ان کے ہمراہ صوبائی سیکرٹری اقبال احمد خان، اعظم خان، محمد حنیف خان، الادین قائمخانی، نور احمد نظامانی، حامد قائمخانی و دیگر ذمے داران بھی موجود تھے۔ جبکہ گرڈ اسٹیشن پہنچنے پر یونین کے زونل چیئرمین مہر اللہ خان ، دھرمیندر، حارث خان، احسن ، طارق ، عبدالمنان قائمخانی، کے علاوہ آر ای گرڈاسٹیشن عبدالہادی سومرو نے اپنے قائدین کا استقبال کیا اور گزشتہ روز پیش آنے والے واقعے کی تفصیلات سے آگاہ کیا جبکہ اغوا ہونے والے ملازم طارق حسین کھتری اور علی نواز عمرانی نے بھی اس بابت بتایا کہ گرڈ اسٹیشن پرحملہ آوروں نے غلیظ زبان استعمال کی اور ہمیں زبردستی اپنے ساتھ لے گئے بعدازاں پولیس کی نفری نے ہمیں بازیاب کرایا جس کے باعث ہم شدید خوف زدہ ہیں اور خود کو غیر محفوظ محسوس کررہے ہیں ۔ اسی اثنا میں ایکسیئن آپریشن حیسکو پھلیلی سید نبی شاہ ، ایس ڈی او پھلیلی حسیب عالم فاروقی اور ایس ایچ او پولیس اسٹیشن راہوکی خادم بھی اپنی ٹیم کے ہمراہ گرڈ اسٹیشن پر پہنچ گئے اور بتایا کہ ایک مجرم طاہر مگسی کو گرفتار کرکے FIRدفعہ 353 کے سخت درج کرلی گئی جبکہ ٹرانسفارمر کی چوری کی FIRبھی درج کرائی جارہی ہے۔ اس موقع پر قائد مزدور عبداللطیف نظامانی نے مزید کہا کہ جس وقت مجھے اس واقعے کی اطلاع ملی میں نے فوری طور چیف ایگزیکٹو آفیسر حیسکو کو اطلاع دی جس پر انہوں نے ڈی آئی جی نور احمد شاہ ودیگر ضلعی انتظامیہ کو آگاہ کیا جس پر ہمارے یرغمال ملازمین کو بازیاب کرایا اور ان کے خلاف FIRکا اندراج ممکن ہوا۔ ہمارا اس وقت گرڈ اسٹیشن پر آنے کا مقصد ملازمین کیساتھ اظہار یکجہتی اور انکی حوصلہ افزائی کرنا اور ساتھ ہی حیسکو انتظامیہ کو بھی باور کرانا ہے کہ ملازمین کو سیفٹی اور سیکورٹی فراہم کی جائے کیونکہ یہ اب ادارے میں اہم مسئلہ بن چکا ہے ساتھ ہی گرڈ اسٹیشن جو اربوں روپوں سے تعمیر ہوتا ہے وہ ہماری قومی دولت و ملکیت ہے اسکی حفاظت بھی وقت کی ضرورت اور ہمارے بچوں کی روزی روٹی ہے ۔ لہذا حالات کا تقاضا ہے کہ پہلے سیفٹی و تحفظ بعد میںکام کے اصول پر عمل درآمد کیا جائے۔انہوں نے نو تعمیر شدہ گرڈ کی حالت زار پر تبصرہ کرتے ہوئے مزید بتایا کہ گرڈ کا سول ورکس غیر معیاری ہے رہائشی کالونی بنادی گئی ہے لیکن پینے کا صاف پانی ، بجلی ، نکاسی آب ، سڑک اور گرڈ کا داخلی دروازہ مرکزی شاہراہ کے بجائے سائیڈ سے نکال کر غیر محفوظ بنادیا گیا جن کو درست کرنا بھی حیسکو انتظامیہ کی ذمے دار ی ہے۔