مزید خبریں

جیکب آباد ،الیکشن کمیشن میں دھاندلی کیخلاف عدالت جائیں گے،جے یو آئی

جیکب آباد(نمائندہ جسارت)جیکب آباد میںبلدیاتی انتخابات میں پی پی کی دھونس ، دھاندلی، ضلعی امیر پر حملہ ،فائرنگ،ایجنٹوں کے اغوا یرغمال اور تشدد کرنے کے خلاف زبردست مظاہرہ،ڈی آر اوکے دفتر اور پریس کلب کے سامنے دھرنا،سخت نعرے بازی، پولیس اور انتظامیہ کی کارکردگی سوالیہ نشان قرار۔ تفصیلات کے مطابق جمعیت علما اسلام کی جانب سے پی پی امیدواروں کی دھونس، دھاندلی، فائرنگ ،ضلعی امیر ڈاکٹر اے جی انصاری پر حملے، ایک درجن گاڑیاں تباہ، دو درجن کارکنوں کے زخمی ہونے کے واقعات کے خلاف ایک بڑا احتجاجی مظاہرہ جے یو آئی کے ضلع امیر ڈاکٹر اے جی انصاری ،مولانا عبدالجبار رند، حافظ میر محمد بنگلانی، انجینئر حماداللہ انصاری. جے ٹی آئی صوبہ سندھ کے رہنمامحکم الدین بروہی ،امیدوار ڈاکٹر منظور احمد کھوسہ، مولانا عبدالقادر کھوسو، شفیع محمد کھوسواورچاکر خان و دیگر کی قیادت میں دفتر جے یو آئی سے نکالا گیا،جس میں سیکڑوں، شہریوں اور کارکنان نے شہر کے مختلف راستوں پر مارچ کرکے دھاندلی نامنظور، دہشت گردی نامنظور کے خلاف نعرے لگائے۔ مظاہرین نے ہاتھوں میں بینرز اور پلے کارڈز اٹھا رکھے تھے۔مظاہرین نے شہر کے ڈی سی چوک، ڈی آر او آفس اور پریس کلب کے سامنے دھرنا دیکرروڈ بلا اور ٹریفک معطل کردیا۔اس موقع پر مقررین نے کہا کہ بلدیاتی انتخابات میں پورے ضلع میںپی پی امیدواروں اور وڈیروں نے دہشت گردی کی، فائرنگ کی، ضلعی امیر ڈاکٹر اے جی انصاری پر حملہ کرکے گاڑیاں تباہ کردیں، رزلٹ تبدیل کیے، ایجنٹوں کو اغوا اور یرغمال بنایا، بیلٹ باکس چوری کیے اور دو درجن کارکنوں کو زخمی کردیا، جو ناقابل برداشت ہے اور کئی پولنگ کے فارم 11 پر رزلٹ نہیں دیے۔ ضلعی امیر نے اعلان کیا کہ زیادتی کرنے والوں کے خلاف اور الیکشن میں دھاندلی کے خلاف عدالت سے رجوع کیا جائے گا۔