مزید خبریں

سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں15فیصد اضافے کی تجویز

اسلام آباد(صباح نیوز) چیئرمین قائمہ کمیٹی برائے خزانہ سینیٹر سلیم مانڈوی والا نے مالی سال 2022/23کی بجٹ سفارشات پر رپورٹ سینیٹ میں پیش کر دی ہے، کمیٹی نے گریڈ ایک سے15تک کے ملازمین کی تنخواہوں میں 15فیصد سے زائداضافہ کی تجویز دی ہے جبکہ گریڈ 16 سے اوپر تک دوسرا اسکیل بنانے کی تجویز ہے۔ خزانہ کمیٹی کی رپورٹ میں کل244 سفارشات پیش کی گئی ہیں، ترقیاتی بجٹ سے متعلق 217 جبکہ دیگر 27 سفارشات پیش کی گئی ہیں۔ کمیٹی نے فارماسیوٹیکل کے خام مال کی خریداری پر17سیلز ٹیکس ختم اور فارماسیوٹیکل مینوفیکچررز سے15 جنوری سے وصول کردہ سیلزٹیکس کی مد میں 40ارب واپس کرنے کی تجویز دی ہے۔ خزانہ کمیٹی نے سفارش کی ہے کہ بیکری آئیٹمز پر ٹیکس کی شرخ 17 فیصد سے کم کرکے ساڑھے 7 فیصد کی جائے، مضر صحت ہونے کے باعث جوسز، انرجی ڈرنک اور آئس ٹی میں چینی کی مقدار کم کی جائے، ایف بی آر مینوفیکچررز کو بینکنگ چینلز کے ذریعے ادائیگیوں کے لیے پابند کیا جائے۔ کمیٹی نے کہا ہے کہ ائر کرافٹ اور ان کے پارٹس کی درآمد پر سیلز ٹیکس کی چھوٹ دی جائے۔سینیٹ کی سفارشات قومی اسمبلی بھجوائی جائیں گی۔