مزید خبریں

نصرتِ دین اور خواتین

…رحمت

…حلال کھاؤ

پیٹرولیم قیمتوں میں اضافے کیخلاف جماعت اسلامی کے مظاہرے، ظالمانہ فیصلے واپس لینے کا مطالبہ

کراچی (اسٹاف رپورٹر)امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن کی ہدایت پر پیٹرول و ڈیزل کی قیمتوں میں 60روپے اضافے اور ہوشربا مہنگائی کے خلاف کراچی میں مختلف اضلاع کے تحت ہفتے کو احتجاجی مظاہرے کیے گئے اور وفاقی حکومت سے مطالبہ کیا گیا کہ ظالمانہ اضافہ فی الفور واپس لیا جائے اور اتحادی حکومت نے اقتدار میں آنے سے قبل مہنگائی کو کم کرنے کے جو وعدے اور دعوے کیے گئے تھے ان کو پورا کرتے ہوئے عوام کو حقیقی معنوں میں ریلیف فراہم کرنے کے اقدامات کیے جائیں ، مظاہرے بنارس ، اورنگی ٹائون ، برنس روڈ فریسکو چوک، واٹر پمپ چورنگی فیڈرل بی ایریا ، ناظم آباد بالمقابل امتیاز سپر اسٹور ، یوپی موڑ نارتھ کراچی ، حسن اسکوائر گلشن اقبال ، نمائش چورنگی ، ڈی سی آفس کورنگی ڈھائی نمبر ، ملیر سعود آباد اور دیگر مقامات پر ہوئے ۔ مظاہروں سے امرا اضلاع مولانا فضل احد ،سیف الدین ایڈووکیٹ ، عبد الجمیل خان ، وجیہ الدین ،محمد یوسف ، توفیق الدین صدیقی ، سابق ایم پی اے حمید اللہ ایڈووکیٹ، ضلعی سیکرٹری سفیان دلاور، ڈاکٹر فواد اور دیگر نے خطاب کیا ۔ مظاہروں کے شرکا نے مختلف بینرز اور پلے کارڈز اُٹھائے ہوئے تھے جب پر ’’آئی ایم ایف کی غلامی نا منظور نامنظور ، پیٹرول کی قیمتوں میں اضافہ واپس لیا جائے ، گیس ، بجلی اور کھانے پینے کی اشیا کی قیمتیں کم کی جائیں،پیٹرول کی قیمتو ں میں اضافہ عوام کا معاشی قتل ہے ، حکمرانوں عوام پر رحم کرو ، مہنگائی ختم کرو ‘‘اور دیگر عبارتیں درج تھیں، مظاہرین نے حکمران اتحاد اور اتحادی جماعتوں کی حکومت کے خلاف پُر جوش نعرے بھی لگائے ، مقررین نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حکمران طبقہ آئی ایم ایف کی غلامی میں ایک دوسرے سے آگے بڑھنے کا مقابلہ کررہاہے ۔ عوام کو ریلیف دینے کے بجائے پیٹرول بم گرائے جارہے ہیں۔ ایک ہفتے میں 2 دفعہ پیٹرول کی قیمت میں اضافہ عوام کا معاشی قتل ہے۔حکمران اپنے شاہانہ اخراجات اورعیاشیاں ترک کرکے سرکاری پروٹوکول ختم کریں۔حکومت آئی ایم ایف کے سامنے جھکنے کے بجائے 23 کروڑ عوام کی فکر کرے۔ حکمران ہوش کے ناخن لیں اور پیٹرول کی قیمت میں اضافہ فوری واپس لیں۔ جماعت اسلامی پورے ملک میں پیٹرول کی قیمت میں اضافے اور مہنگائی کے خلاف تحریک چلا رہی ہے۔ اگر پیٹرول کی قیمت میں اضافہ واپس نہ لیا گیا تو جماعت اسلامی بڑے پیمانے پر دھرنوں کا آپشن بھی رکھتی ہے۔انہوں نے کہا کہ پیٹرول کی قیمتوں میں اضافے سے ضروریات زندگی کی اشیا کی قیمتوں میں اضافہ ہو گیا ہے۔سبزی دالیںاور گوشت سمیت کھانے پینے کی اشیا مہنگی ہونے سے عوام شدید پریشانی میں مبتلا ہیں۔10سے 15 ہزار ماہانہ کمانے والے بجلی و گیس کا بل ادا کرنے سے قاصر ہیں۔ اگر مہنگائی اور بے روزگاری میں اضافہ ہوتا رہا تو عوام حکمرانوں کو ایوانوں میں بیٹھنے نہیں دیں گے۔ عوام جماعت اسلامی کا ساتھ دیں اور مہنگائی و بے روزگاری کے خلاف تحریک کا حصہ بنیں۔دریں اثنا جماعت اسلامی سندھ کے نائب امیر حافظ نصراللہ چنا نے کندھ کوٹ میں لائبریری چوک پرمنعقدہ احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ شہباز شریف کی قیادت میں قائم اتحادی حکومت نے عوام کی زندگی اجیرن بنادی ہے، اپنے کپڑے بیچ کر عوام کو ریلیف دینے کے دعویدار وزیراعظم نے اب عوام کے تن سے بھی کپڑے اتارنے کا تہیہ کرلیا ہے۔جو زخم عمران حکومت نے عوام کو دیے ان پر مرہم رکھنے کے بجائے موجودہ حکومت نے نمک پاشی کردی ہے۔سکرنڈ میں جماعت اسلامی کے تحت چانڈیہ پمپ تا سینما چوک تک احتجاجی ریلی نکالی گئی جس سے نائب امیر ضلع شہید بینظیرآباد کنور راشد مکرم نے خطاب کیا،نیویارڈ روہڑی سکھر میں احتجاجی مظاہرسے ایڈووکیٹ سلطان لاشاری نے خطاب کیا ، ضلع ٹنڈومحمد خان کے تحت مقام راجو نظامانی میں مقامی امیر عامر شیخ، عبدالوحید نظامانی ،عبیداللہ نظامانی کی قیادت میں مظاہرہ کیا گیا جس میں بڑی تعداد میں عوام نے شرکت کی۔