مزید خبریں

Jamaat e islami

اپنے کیس کی سماعت کے لیے سابق جج کاچیف جسٹس کوخط

اسلام آباد (صباح نیوز)اسلام آباد ہائیکورٹ کے سابق جج شوکت عزیز صدیقی نے چیف جسٹس پاکستان کے نام خط میں استدعا کی ہے کہ میںمالی مشکلات کا شکار ہوں، خواہش ہے میری زندگی ہی میں میرے کیس کا فیصلہ ہو جائے، کیس کو سماعت کے لیے مقرر کرکے روزانہ کی بنیاد پر سنا جائے۔ خط میں کہا گیا ہے پوری زندگی عدالت اور وکالت کے لیے مختص کرنے والے کے لیے یہ تکلیف دہ ہے کہ وہ انصاف کے لیے بار بار عدل کی زنجیر ہلائے،انصاف میں تاخیر انصاف سے انکار ہے،اگر میری داد رسی نہیں ہو رہی تو عام آدمی پر کیا گزرتی ہوگی؟ 13 جون سے عدالتوں میں گرمیوں کی چھٹیاں ہو رہی ہیں،اس دوران 2 معزز جج ریٹائرڈ ہو جائیں گے اوربینچ ٹوٹ جائے گا،خواہش ہے کہ میری زندگی میں ہی میرے ساتھ ہونے والے ظلم و زیادتی کا ازالہ ہو۔