مزید خبریں

سنی اتحاد کونسل کے بابر سلیم اسپیکر اور ثریا بی بی ڈپٹی اسپیکر پختونخوا اسمبلی منتخب

پشاور (آن لائن) خیبرپختونخوا اسمبلی کے اجلاس میں اسپیکر اور ڈپٹی اسپیکر کا انتخاب کر لیا گیا۔ سنی اتحاد کونسل کے بابر سلیم سواتی اسپیکر خیبرپختونخوا جبکہ ثریا بی بی ڈپٹی اسپیکر منتخب ہوگئیں،جے یو آئی ف کے ارکان نے انتخابی عمل کا بائیکاٹ کیا۔ نومنتخب اسپیکر اور ڈپٹی اسپیکر نے اپنے عہدوں کا حلف بھی اْٹھا لیا، بابر سلیم سواتی 89 ووٹ لیکر کامیاب ہوئے جبکہ احسان اللہ خان نے 17 ووٹ حاصل کرسکے۔ دوسری جانب ڈپٹی اسپیکر ثریا بی بی 87 ووٹ حاصل کر کے کامیاب ہوئیں جبکہ ارباب و سیم حیات کو 19ووٹ پڑے۔ نئے اسپیکر اور ڈپٹی اسپیکر خیبرپختونخوا اسمبلی نے حلف اٹھاتے ہی عہدہ سنبھال لیا۔ دریں اثنا اسمبلی میں اسپیکر کے انتخاب کے دوران بھی شور شرابہ اور ہنگامہ آرائی کی گئی ۔ گیلریز میں بیٹھے تحریک انصاف کے ورکرز نے نعرے لگائے۔ن لیگی رکن ثوبیہ شاہد کے ووٹ کاسٹ کے دوران ورکرز نے نازیبا نعرے لگائے جس کے بعد لیگی رکن شکایت لگانے نامزد وزیر اعلیٰ علی امین گنڈا پور کے پاس پہنچ گئیں۔ نامزد وزیر اعلیٰ نے ثوبیہ شاہد کے سر پر ہاتھ رکھا، تاہم وہ ورکرز کو خاموش کرانے میں ناکام رہے۔ نعروں اور ہلڑ بازی کے دوران گیلریز سے پی ٹی آئی ورکرز نے ثوبیہ شاہد پر جوتا پھینک دیا۔ قبل ازیںاسپیکر مشتاق غنی نے کے پی اسمبلی کے 2 نو منتخب اراکین لائق احمد خان اور عبدالمنعم نے اسمبلی رکنیت کا حلف لیا۔ پختونخوا اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر کے لیے مسلم لیگ(ن)کی جانب سے ڈاکٹر عباد اللہ کو نامزد کیا گیا ہے جبکہ وزیراعلیٰ کے منصب کے لیے انتخاب آج ہوگا، اس سلسلے میں پاکستان مسلم لیگ(ن)کی جانب سے ڈاکٹر ہشام انعام اللہ کو نامزد کیا گیا ہے جب کہ علی امین گنڈاپور آزاد حیثیت سے وزیراعلیٰ کا انتخاب لڑیں گے۔ صوبائی اسمبلی میں اراکین کی تعداد 118 ہو گئی ہے، جس میں سنی اتحاد کونسل کے ارکان کی تعداد 87 جبکہ6 ارکان آزاد حیثیت سے اسمبلی میں موجود ہیں۔ خیبر پختونخوا میں اپوزیشن جماعتوں کے ارکان کی تعداد 25ہے۔بعد ازاں اسپیکر نے صوبائی اسمبلی کا اجلاس آج (جمعہ) تک کے لیے ملتوی کردیا۔ وزیراعلی خیبر پختونخوا کا انتخاب آج صبح 10 بجے ہوگا۔