مزید خبریں

سیلابی صورتحال، گوادر آفت زدہ قرار، مولانا ہدایت بلوچ نے ہنگامی اجلاس کرلیا

کوئٹہ(نمائندہ جسارت +خبر ایجنسیاں) بلوچستان کی نگراں حکومت نے سیلابی صورتحال کے باعث گوادر کو آفت زدہ قرار دے دیا ہے۔گوادر کو آفت زدہ قرار دینے کی تصدیق نگراں وزیر اطلاعات بلوچستان جان اچکزئی نے کر دی ، جان اچکزئی کا کہنا ہے کہ گوادر کو حالیہ طوفانی بارشوں کے بعد تشویشناک صورتحال کے باعث آفت زدہ قرار دیا گیا ہے گوادر کو آفت زدہ قرار دینے کے حوالے سے نگراں وزیراعلیٰ نے سمری دستخط کردی ،نگراں وزیراعلیٰ گوادر سمیت تمام بارش سے متاثرہ علاقوں میں امدادی سرگرمیوں کی خود مانیٹرنگ کررہے ہیں۔دریں اثنا رکن صوبائی اسمبلی مولانا ہدایت الرحمن بلوچ نے گوادر پہنچتے ہی واجہ حسین واڈیلہ اور ڈسٹرکٹ چیئرمین میار جان نوری کی موجودگی میں ضلع گوادر میں امدادی کو کاموں کو تیز کرنے کے لیے ایک اعلیٰ سطح ہنگامی اجلاس طلب کرلیا۔اجلاس میں کمشنر مکران، ڈپٹی کمشنر گوادر، جی ڈی اے چیف انجینئر،ڈپٹی ڈائریکٹر پی ڈی ایم اے، ایکسیئن ایریگیشن، ایکسیئن روڈ اینڈ بلڈنگ، ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر، ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر، ایکسیئن پبلک ہیلتھ، چیف میونسپل آفیسر اور دیگر سیاسی و سماجی شخصیات شریک ہوئے۔ رکن صوبائی اسمبلی مولانا ہدایت الرحمن بلوچ نے اجلاس میں واضح طور پر کہا کہ مجھے ٹیکنیکل ایشوز نہ بتائیں بلکہ ضلع گوادر کے تمام سرکاری و غیرسرکاری وسائل کو فوری طور استعمال میں لاتے ہوئے عوام کو ہنگامی امداد فراہم کی جائے گوادر، سربندر، پش کان اور جیونی کے علاقوں میں نکاسی آب کو مؤثر طریقے سے انجام دیا جائے، اجلاس میں واضح طور پر کہا کہ کسی بھی قسم کی غفلت برداشت نہیں کی جائے گی اور تمام اداروں کے سربراہ فیلڈ میں موجود رہیں۔مزید برآں محکمہ تعلیم بلوچستان نے موسم سرما کی تعطیلات میں 7 مارچ تک توسیع کر دی ہے۔محکمہ تعلیم کے جاری اعلامیے کے مطابق موسم سرما کی تعطیلات میں اضافہ ہنگامی بنیاد پر حالیہ بارشوں کے پیش نظر کیا گیا ہے۔ بلوچستان کے تمام سرکاری اور پرائیویٹ اسکولز 7 مارچ 2024 ء تک بند رہیں گے۔ تمام ڈسٹرکٹ تعلیمی افسران اور تعلیمی اداروں کے سربراہان کو احکامات پر عمل درآمد یقینی بنانے کی ہدایت دی گئی ہے۔