مزید خبریں

مغرب کیلیے نرم گوشہ رکھنے والوں کی آنکھیں کھل جانی چاہیے، زاہد بلوچ

 

کوئٹہ (نمائندہ جسارت) جماعت اسلامی بلوچستان کے جنرل سیکرٹری زاہد اختر بلوچ نے کہا ہے کہ فلسطین میں جنگ بندی سے متعلق امریکا نے تیسری مرتبہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں قرارداد کو ویٹو کر دیا، جس ڈھٹائی اور ہٹ دھرمی کے ساتھ ویٹو کیا گیا، اس سے ان لوگوں کی آنکھیں کھل جانی چاہییں جو مغرب کے لیے نرم گوشہ رکھتے ہیں۔ مغرب یہودونصاریٰ ہمیشہ اُمت مسلمہ کے خلاف ہر محاذ پر رہا ہے لیکن مسلم حکمران خواب غفلت، اقتدار بچانے اور مفادات کے لیے یہودونصاریٰ کے غلام بنے ہوئے ہیں، الیکشن متنازع بنانے والے عوام، جمہوریت کے دشمن ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ یہ بات عیاں ہو گئی کہ رائے عامہ کی مغرب کے ہاں کوئی قدرومنزلت نہیں، اسرائیل فلسطین میں بچوں اور خواتین پر بربریت کی انتہا کر رہا ہے، اس وقت غزہ میں پانی، خوراک اور دوائوں کی قلت ہے، ڈاکٹر اور علاج کی سہولیات ناپید ہیں۔ مغربی ممالک میں انسانیت اور اخلاقیات نام کی کوئی چیز باقی نہیں رہی، سفاکیت کے ساتھ ظلم کی پشت پناہی کی جا رہی ہے۔ اس صورت حال میں اُمت مسلمہ کو سوچنا چاہیے، مسلم عوام کچھ نہیں کر سکتے کم ازکم اسرائیلی یہودی مصنوعات کا بائیکاٹ تو کر سکتے ہیں۔