مزید خبریں

میئر کراچی فٹبال کلبوں اور کھلاڑیوں کیلیے کچھ کر پائیں گے؟

حالیہ بلدیاتی انتخابات میں پاکستان کی75 سالہ تاریخ میں پہلی مرتبہ پاکستان پیپلز پارٹی کراچی شہر کی خدمت کا مینڈیٹ حاصل کر چکی ہے جو ایک خوش آئند اور اہلیان کراچی کے لیے خوشبختی کی علامت ہے اس سے بیشتر جو جماعت بھی مینڈیٹ لے کر آتا تو ان کا رونا بہانہ یہ ہوتا ہمیں صوبائی یا مرکزی حکومت کی جانب سے اپنی مرضی سے کام کرنے نہیں دیا جاتا یا فنڈ کی کمی کا رونا روتے نظر آتے اس مرتبہ پاکستان پیپلز پارٹی کی مرکزی قیادت نے خدمت کے جذبے سے سرشار نوجوان قیادت کو شہر کی بھاگ دوڑ خدمت کی ذمہ داری کے لیے منتخب کیا ہے جہاں مئیر کراچی کیلیے مرتضی وہاب صدیقی ڈپٹی میئر سلمان عبداللہ مراد جیسے نوجوان بہترین چوائس ہیں ساتھ ہی ٹاؤن ناظم کے لیے بھی اس مرتبہ زیادہ تر نوجوان نیک نام نمائندوں کا انتخاب کیا گیا ہے اگر انہیں بغیر کسی مداخلت کے خدمت کا موقعہ دیا گیا تو وہ عوامی خدمت کے ساتھ پاکستان پیپلز پارٹی کی نیک نامی کا بھی باعث ہونگے_ دنیا میں مقبول ترین کھیل “فٹبال” پاکستان میں جہاں زبوں حالی کا شکار ہے وہاں کراچی بھر کے فٹبال لورز آرگنائزرز کلبوں اور ڈسٹرکٹ کے عہدیداروں نے اپنی مدد آپ کے تحت زندہ کیے ہوئے ہیں کسی زمانے میں زندہ دلان لیاری جنہیں منی برازیل بھی کہتے ہیں پاکستان فٹبال ٹیم میں ہراول دستے کا کردار ادا کرتی رہی ہے ، ساتھ ہی ملیر کراچی ملک بھر کے فٹبال کھلاڑی جو مختلف ڈیپارٹمنٹل ٹیموں کا حصہ تھے پاکستان کیاسپورٹس مین سابق وزیر اعظم نے ایک آرڈر کے ذریعے تمام ڈیپارٹمنٹل ٹیموں کو بند کرکے ہزاروں کھلاڑیوں کو نان شبینہ کا محتاج بنایا ہمارے حالیہ وزیراعظم میاں شہباز شریف نے کافی عرصہ پہلے ڈپارٹمنٹل ٹیموں پر عائد پابندی ختم کردی لیکن تاحال حکومت وقت کی خواب خرگوش کی وجہ سے اس پر عمل درآمد نہیں کیا گیا اب عوامی شہری حکومت کے آنے سے فٹبال لورز کلب کھلاڈیوں میں خوشی کی لہر دوڑ گئی ہے سونے پہ سہاگہ کراچی کے مئیر مرتضی وہاب صدیقی ڈپٹی میئر سلمان عبداللہ مراد جو خود فٹبال سے جنون کی حد تک محبت کرنے والی شخصیت ہیں چیئرمین لیاری ٹاؤن ناصر کریم بلوچ چیئرمین ملیر ٹاؤن جان محمد بلوچ چیئرمین گڈاپ ٹاؤن حاجی طارق بلوچ چیئرمین بلدیہ ٹاؤن کریم آسکانی چیئرمین ابراہیم حیدری ٹاؤن نظیر احمد بھٹو و دیگر کراچی کے معزز ٹاؤن چیئرمین کے کراچی کے 25 ٹاؤن ہے اگر ہر ٹاؤن چیئرمین پاکستان پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری کے وژن کے مطابق جو اکثر فٹبال کھیل کے متعلق اپنی دلچسپی اور محبت کا اظہار کرتے رہے ہیں اپنے ٹاؤن کے 25 منتخب کھلاڈیوں کی ٹیم بنا کر انہیں پینتیس چالیس ھزار روپے تنخواہ دے کر ان کے روٹی روزگار کا بندوبست کرے تو ہر ٹاؤن سے پچیس خاندان کا چھولا جلے گا ساتھ ہی اگر حکومت سندھ کے بند ڈپارٹمنٹل ٹیمیں سندھ گورنمنٹ پریس ، پی ڈبلیو ڈی ، ہاؤس بلڈ نگ لوکل باڈیز کی کے ایم سی ، واٹر بورڈ کی سابقہ ٹیمیں بحال ہو تو ہمارے نوجوان منفی سرگرمیوں منشیات و دیگر سماجی برائیوں سے دور ہوکر ایک باعزت شہری کا روپ دھارینگے –