مزید خبریں

Jamaat e islami

لاڑکانہ ،قتل کا جرم ثابت،3ملزمان کو عمر قید ،2,2 لاکھ جرمانے کی سزا

لاڑکانہ(نمائندہ جسارت) لاڑکانہ کی ماڈل کورٹ نے قتل کا جرم ثابت ہونے پر 3 ملزمان کو عمر قید اور 2.2 لاکھ روپے جرمانے کی سزا سناتے ہوئے ایک ملزم کو بری کردیا۔تفصیلات کے مطابق سال 2018 ء کے دوران لاڑکانہ کے تھانہ الہ آباد میں قتل ہونے والے مظفر جتوئی کے قتل مقدمے کی سماعت سکستھ ایڈیشنل سیشن و ماڈل کرمنل ٹرائل کورٹ لاڑکانہ کے جج کی عدالت میں ہوئی جہاں جرم ثابت ہونے پر عدالت نے تین ملزمان صدام جتوئی، غلام سرور جتوئی اور نادر جتوئی کو عمر قید اور دو دو لاکھ روپے جرمانے کی سزا سنائی گئی جبکہ جرم ثابت نہ ہونے پر مقدمے میں نامزد فضل محمد جتوئی کو بری کردیا۔واضح رہے کہ 14 جون 2018ء کو لاڑکانہ شہر کے تھانہ الہ آباد کی حدود میں پرانے جھگڑے کی بنا پر مسلح افراد نے مظفر جتوئی کو گولی مار کر قتل کر دیا تھا جس واقعے کا مقدمہ مقتول کی دادی زرینہ جتوئی کی مدعیت میں چار ملزمان صدام جتوئی، غلام سرور جتوئی، نادر جتوئی اور فضل محمد جتوئی پر درج کیا گیا۔