مزید خبریں

Jamaat e islami

ہندو انتہا پسندوں نے ریلوے اسٹیشن کے سبز رنگ پر ہنگامہ کردیا

نئی دہلی (انٹرنیشنل ڈیسک) بھارت میں مودی سرکار کی جانب سے مسلم ثقافت کی علامات، تاریخی مقامات و عمارتوں کی مسماری اور نام بدلنے کا سلسلہ جاری ہے۔حال ہی میں بھارتی ریاست کرناٹک میں کلبرگی ریلوے اسٹیشن کے سبز رنگ کو مسجد سے مماثلت قرار دیتے ہوئے ہندو انتہا پسندوں نے تبدیل کرنے کا مطالبہ کردیا، جس کے بعد انتظامیہ نے مجبور ہوکر سبز رنگ کو سفید سے تبدیل کردیا۔ ریلوے انتظامیہ کی جانب سے اسٹیشن پر سبز رنگ و روغن کروائے جانے کے بعد بھارتی ہندو انتہا پسند تنظیموں کی جانب سے مظاہروں کا سلسلہ شروع کردیا گیا اور انتظامیہ پر دباؤ ڈالا گیا کہ سبز رنگ کی وجہ سے ریلوے اسٹیشن مسجد جیسا نظر آنے لگا ہے، لہٰذا اسے فوری تبدیل کردیا جائے۔ انتہا پسندوں کی جانب سے ریلوے اسٹیشن کا رنگ بدلنے کے لیے دباؤ اتنا شدید تھا کہ انتظامیہ کو احتجاج روکنے کے لیے پولیس سے مدد طلب کرنی پڑی۔ دوسری جانب سماجی رابطوں کی ویب سائٹ پر صارفین انتہا پسندوں کی جانب سے واویلا کرنے پر شدید تنقید کررہے ہیں۔ ایک ٹوئٹر صارف نے انتہا پسندانہ رویے پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ریلوے اسٹیشن کا رنگ تو بدل دیا لیکن ان درختوں کا کیا کرنا ہوگا، جو اب بھی لگے ہوئے ہیں، وہ بھی تو سبز ہیں۔ صارفین نے ہندو انتہا پسندوں کی جانب سے مسلم مخالف مہم کو تعصب پھیلانے کا تسلسل قرار دیتے ہوئے حکومتی اداروں کی بے بسی کو بھی کڑی تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔