مزید خبریں

Jamaat e islami

پاکستان میں جاری زرمبادلہ کا بحران سنگین ہوتا جا رہا ہے، میاں زاہد حسین

کراچی(کامرس رپورٹر) چیئرمین نیشنل بزنس گروپ پاکستان میاں زاہد حسین نے کہا ہے کہ پاکستان میں جاری زرمبادلہ کا بحران سنگین تر ہوتا جا رہا ہے، اس بحران کی وجہ سے ملکی و غیر ملکی سرمایہ کار پریشان ہیں اور انکا اعتماد کم ہوتا جا رہا ہے کیونکہ ان کی ایل سی نہیں کھل رہیں اور پورٹ پر موجود مال زرمبادلہ نہ ملنے کی وجہ سے کلیئر نہیں ہو رہا اور انہیں لاکھوں روپے روزانہ کے ڈیمرج اور ڈیٹینشن چارجز کا سامنا ہے،آئی ایم ایف کا نواں جائزہ بھی تاخیر کا شکار ہے،اس صورتحال میں پاکستان جلد از جلد آئی ایم ایف، سعودی عرب اور چین سے قرضوں کا انتظام کرے تاکہ ملک کو مزید نقصان سے بچایا جا سکے۔ میاں زاہد حسین نے کاروباری برادری سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ کل ملا کر ہماری60 ارب ڈالر کی سالانہ آمدن ہے جبکہ 80 ارب ڈالر کی درآمدات ہیں اور اسی وجہ سے ملک کو قرضوں کے بغیر چلانا ناممکن ہے،خودکفالت کے حصول کے لیے ہمیں آمدن بڑھانا ہوگی اور درآمدات کو کم کرنا ہوگا۔ معاشی پالیسیوں کو عوامی فلاح کے لیے نئے سرے سے ترتیب دینا ہو گا۔