مزید خبریں

Jamaat e islami

پی ایس او کیلیے 50ارب روپے فوری قرض کی سہولت

اسلام آباد (کامرس ڈیسک ) اقتصادی رابطہ کمیٹی نے پی ایس او کیلئے 50 ارب روپے فوری قرض کی سہولت،درآمدی یوریا کی فی بوری کی قیمت 2150 روپے ،پی آئی اے کیلئے 14 کروڑ 20 لاکھ روپے کی مالی سہولت کی منظوری دیدی۔وفاقی وزیر خزانہ و محصولات مفتاح اسماعیل کی زیر صدارت کابینہ کی اقتصادی رابطہ کمیٹی (ای سی سی) کا اجلاس منعقد ہوا۔اجلاس میں وفاقی وزیر تجارت سید نوید قمر، وفاقی وزیر برائے بجلی خرم دستگیر خان، شاہد خاقان عباسی ایم این اے/سابق وزیراعظم، وزیر مملکت برائے خزانہ و محصولات ڈاکٹر عائشہ غوث پاشا، وزیر مملکت برائے پیٹرولیم مصدق مسعود ملک، ایس اے پی ایم برائے حکومتی افادیت ڈاکٹر محمد جہانزیب خان، وزیر اعظم کے کوآرڈینیٹر برائے معیشت بلال اظہر کیانی، وزیر اعظم کے کوآرڈینیٹر برائے تجارت و صنعت رانا احسان افضل، وفاقی سیکرٹریز اور سینئر افسران نے اجلاس میں شرکت کی۔وزارت توانائی (پیٹرولیم ڈویڑن) نے پی ایس او کے لیے سنڈیکیٹڈ رننگ فنانس سہولت سے متعلق سمری پیش کی۔ 31 جولائی 2022 کو ای سی سی کے اجلاس میں پی ایس او کے لیکویڈیٹی ایشوز پر تبادلہ خیال کیا گیا، جس میں پی ایس او کے لیکویڈیٹی مسائل کو کم کرنے کے لیے حکومتی گارنٹی والے قرض کا بندوبست کرنے پر بھی بات ہوئی۔ بینکوں کا ایک کنسورشیم تشکیل دیا گیا جس میں اے بی ایلاین بی پی ، ایم سی بی یوبی ایل اور HBL شامل ہیں۔ای سی سی نے پی ایس او کیلئے 50 ارب روپے فوری قرض کی سہولت کی منظوری دیدی، وزارت خزانہ نے مالی سال کی پہلی سہ ماہی میں پی ایس او کو 105 ارب روپے کی گارنٹی حد مقرر کی ہے۔ حکومتی گارنٹی کے ذریعے پی ایس او کو 50 ارب روپے ادا کئے جائیں گے، چونکہ گارنٹی کے اجراء میں وقت لگے گا۔