مزید خبریں

Jamaat e islami

یو کرین ، ایٹمی پاور پلانٹ پر راکٹ حملہ ، 13افراد ہلاک

کیف (انٹرنیشنل ڈیسک) روس کے زیر قبضہ یوکرین کے ایٹمی پاور پلانٹ پر راکٹ حملے میں 13 افراد ہلاک اور 11زخمی ہوگئے۔ خبر رساں ادارے کے مطابق حملے میں مرنے والے تمام افراد عام شہری تھے، یوکرین نے حملے کا الزام روسی فوج پر لگا یا ہے،جب کہ روس کا کہنا ہے کہ راکٹ روس مخالف فورسز نے داغے۔ ادھر ایٹمی پاور پلانٹ کے احاطے میں راکٹ حملوں کے باعث ماہرین کو ایٹمی مواد کے پھیلنے کا خدشہ ہے۔دوسری جانب کریمیا میں روسی ائربیس پر اسلحہ ڈپو میں آتشزدگی کے باعث کئی دھماکے ہوئے،جن میں ایک شخص ہلاک اور 8زخمی ہوگئے۔خبررساں اداروں کے مطابق ائر بیس پر ہونے والا دھماکا تخریب کاروں کی کارستانی ہوسکتی ہے۔ روسی وزارت دفاع کا کہنا ہے کہ مغربی ساحلی علاقے پر واقع ساکی ائر بیس پر ہتھیاروں کے ایک ڈپو میں دھماکاہوا۔ یہ کریمیا میں واقع ہے جسے روس نے 2014 ء میں ضم کرلیا تھا اور فروری میں یوکرین کے خلاف اپنی فوجی کارروائی کے لیے اس علاقے کا بھی استعمال کر رہا ہے۔ سوشل میڈیا پر وائرل کئی وڈیو میں دھماکے کی جگہ سے دھوئیں کے گہرے بادل اٹھتے دیکھے جاسکتے ہیں۔ حکام نے بتایا کہ جائے وقوع کے اطراف میں 5کلومیٹر کے دائرے کے علاقے کو سیل کردیا گیا ہے۔ ادھر کیف حکومت نے حملے کی تردید کی ہے۔ یوکرین کے صدر وولودیمیر زیلنسکی کے مشیر میخائلو پوڈولیاک نے کہا کہ ان دھماکوں سے روس کی کمزوریوں کا بھی پتا چلتا ہے۔ ہم اس میں ملوث نہیں ہیں ۔