مزید خبریں

Jamaat e islami

ہیلی کاپٹرحادثے پرتوہین آمیز مہم کی تحقیقاتی کمیٹی میں آئی ایس آئی، آئی بی افسران بھی شامل

اسلام آباد (صباح نیوز) وفاقی حکومت نے ہیلی کاپٹرکریش منفی پروپیگنڈہ کیس میں مشترکہ تحقیقاتی ٹیم قائم کردی، جس کا نوٹیفکیشن جاری کردیا گیا ہے۔ وزارت داخلہ نے بلوچستان میں فلڈ ریلیف آپریشن کے دوران آرمی ہیلی کاپٹر کے حادثے کے المناک واقعے پر سوشل میڈیا پر منفی مہم چلانے والوں کا سراغ لگانے اور گرفتار کرنے کے لیے جوائنٹ انکوائری ٹیم تشکیل دے دی۔ وزارت داخلہ نے 6رکنی ٹیم تشکیل دی ہے جسے ہیلی کاپٹر حادثے کے المناک واقعے پر سوشل میڈیا پر منفی مہم چلانے میں ملوث افراد کی نشاندہی، گرفتاری اور قانونی کارروائی کا کام سونپا گیا ہے۔ وزیر داخلہ رانا ثنااللہ کی جانب سے تشکیل دی گئی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کی سربراہی ایف آئی اے سائبر کرائم ونگ کے ایڈیشنل ڈائریکٹر جنرل محمد جعفر کریں گے۔ ان کے علاوہ ٹیم میں ڈائریکٹر(سائبر کرائم، شمالی)وقار الدین سعید اور ایڈیشنل ڈائریکٹر عمران حیدر، ڈپٹی ڈائریکٹر ایاز شامل ہوں گے جبکہ آئی ایس آئی سے لیفٹیننٹ کرنل سعد جبکہ آئی بی سے ڈپٹی ڈائریکٹر محمد نثار وقار چودھری بھی ٹیم کا حصہ ہوں گے۔حکام کے مطابق ایف آئی اے اور انٹیلی جنس اداروں کی چھ رکنی جوائنٹ انکوائری ٹیم ہیلی کاپٹر حادثے و شہدا سے متعلق منفی ٹرینڈ چلانے والوں کا پتا چلا ئے گی، ان عناصر کے پیچھے کون کون ملوث ہے یا کن کن کے کہنے پر یہ ٹرینڈ چلا کر ملک کو بدنام اور شہدا کی فیملز و قوم کی دل آزاری کی کا بھی پتا چلائے گی۔جوائنٹ انکوائری ٹیم کی انکوائری کے بعد ملوث عناصر کے خلاف مقدمات درج کرکے قانونی کارروائی کو آگے بڑھایا جائے گا۔