مزید خبریں

Jamaat e islami

غزہ پر اسرائیلی بمباری جاری،شہدا کی تعداد 32 ہوگئی ،سلامتی کونسل کا اجلاس آج طلب

غزہ / واشنگٹن (مانیٹرنگ ڈیسک/ خبر ایجنسیاں) مزاحمتی تنظیم اسلامک جہاد کے خلاف آپریشن کے نام پر اسرائیل کی غزہ پر وحشیانہ بمباری دوسرے روز بھی جا رہی ہے جس میں مجموعی طور پر 6 بچوں سمیت 32 افراد شہید ہوگئے جب کہ 250 کے قریب زخمی ہوئے۔ گزشتہ روزاسرائیلی فورسز نے غزہ پٹی میں ایک مہاجر کیمپ کو نشانہ بنایا جس میں 9 افراد شہید ہو گئے۔ اسرائیلی فوج نے اسلامک جہاد کی سینئر قیادت کو ختم کر دینے کا دعویٰ کرتے ہوئے غزہ پر ایک ہفتے تک فضائی حملے جاری رکھنے کی دھمکی بھی دے دی ہے۔ غیر ملکی خبر ایجنسی کا کہنا ہے کہ آزاد ذرائع سے کمانڈر خالد منصور کی شہادت کی تصدیق نہیں ہو سکی جبکہ اسلامک جہاد نے اسرائیل پر سیکڑوں راکٹ فائر کر کے کہا ہے کہ جنگ تو ابھی شروع ہوئی ہے۔صیہونی ریڈیو نے کہا ہے کہ اب تک تل ابیب اور صیہونی کالونیوں پر 400 سے زاید راکٹ اور میزائل داغے گئے ہیں۔ اسرائیلی حملوں کے بعد پاور پلانٹ کی بندش سے غزہ کے اسپتالوں میں صورتحال انتہائی تشویشناک ہو گئی ۔فلسطینی وزارت صحت نے اعلان کیا ہے کہ اسرائیلی بمباری کے نتیجے میں بجلی کی بندش کے بعد غزہ کے اسپتالوں اور کلینکس میں ایمرجنسی وارڈز ، انتہائی نگہداشت کے یونٹس، آپریشن تھیٹرز میں سرجری کا کام مشکل تر ہوگیا ہے جبکہ ڈائیلاسز کی سہولیات اور کلینیکل لیبارٹریز کی فعالیت مشکل ہو چکی ہے حتی کہ اسپتالوں میں نرسری اور لانڈریز تک کی سروسز متاثر ہو گئی ہیں۔سعودی عرب نے غزہ پر اسرائیلی فوج کے حملے کی شدید مذمت کرتے ہوئے عالمی برادری سے کشیدگی ختم کرانے کے لیے اپنا کردار ادا کرنے کا کہا ہے۔ پاکستان نے بھی غزہ پر اسرائیلی حملے کی شدید مذمت کرتے ہوئے حملوں کو غیر قانونی اقدامات کی مثال قرار دیا ہے اور عالمی برادری سے اسرائیل کو فلسطینیوں کے خلاف طاقت کے بے دریغ استعمال سے روکنے کا مطالبہ کیا ہے جبکہ مصر کی جانب سے بھی فریقین کے درمیان ثالثی کی کوشش کی جا رہی ہیں۔ ایران کے صدر ابراہیم رئیسی نے غزہ پر اسرائیل کی جارحانہ بمباری کی مذمت کی ہے ۔ صدر نے اپنے مذمتی بیان میں کہا ہے کہ اسرائیل ایک مجرمانہ شناخت رکھنے والی قابض ریاست ہے جو بچوں کو قتل کر رہی ہے۔ ترکی نے فضائی حملوں کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا کہ اسرائیلی حملوں میں بچوں سمیت شہریوں کی جانوں کا نقصان ناقابل قبول فعل ہے، ہمیں حملوں کے بعد خطے میں بڑھتی ہوئی کشیدگی پر گہری تشویش ہے۔اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نے اسرائیل کے فلسطین پر پے در پے فضائی حملوں کی مذمت کی ہے۔ امریکی میڈیا کے مطابق اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نے غزہ پر اسرائیلی فضائی حملوں کی مذمت کرتے ہوئے آج بروز پیر کو ہنگامی اجلاس طلب کر لیا ہے۔