مزید خبریں

Jamaat e islami

ـ8محرم کا جلوس، سیکورٹی سخت ، موبائل فون سروس معطل

کراچی (اسٹاف رپورٹر) سادات امروہہ کے تحت 8 محرم الحرام کا جلوس اتوارکونشتر پاک سے برآمد ہوا اور مقررہ راستوں سے ہوتا ہوا حسینیان ایرانیان پر اختتام پذیر ہوا۔ اس دوران سیکورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے تھے اور موبائل فون سروس بھی معطل رہی۔ جلوس کے راستوںمیں اسکاؤٹس اور مختلف تنظیموں نے طبی کیمپ بی لگائے تھے۔  جلوس میں شریک عزاداران حسین نے سینہ کوبی کی ۔ جلوس کے شرکا راستے بھر نوحے پڑھتے رہے اور ماتم کرتے رہے۔ جلوس کے راستوں صدر، آئی آئی چندریگر روڈ، کھارادار، ایم اے جناح روڈ، پیپلز چورنگی اور ریڈیوپاکستان سمیت اطراف کے علاقوں میں موبائل فون سگنل بند رہے۔ کراچی میں 8 محرم الحرام کا جلوس نمائش سے برآمد ہونے کے بعد اپنے مقررہ راستوں پر تبت سینٹر سے نیپئر روڈ کی ’بارہ امام‘ امام بارگاہ میں قیام کے بعد حسینیان ایرانیان کھارادر میں اختتام پذیر ہوا۔ قبل ازیں مولانا محمد علی نقوی نے مجلس پڑھی۔ انہوں نے کہا کہ امام حسین ؓکا غم آج پوری دنیا میں عقیدت واحترام سے منایا جا رہا ہے ،ان کا پیغام امت مسلمہ کا اتحاد تھا جلوس کی قیادت ابوالحسن اسکاؤٹ نے کی۔جلوس کے روٹ میں آنے والی تمام سڑکوں اور گلیوں کو کنٹینرز اور قناتیں لگا کر سیل کر دیا گیا تھا۔ جلوس کی سیکورٹی کے لیے سی سی ٹی وی کیمروں کی مددسے نگرانی کی گئی۔
جبکہ بڑی عمارتوں پر شارپ شوٹرز تعینات کیے گئے تھے۔ اس سلسلے میں پولیس رینجرز سمیت دیگر قانون نافذ کرنیوالے اداروں کے اہلکار جلوس کے راستوں پر تعینات رہے۔ پولیس افسران و جوانوں نے 8 محرم الحرام کے جلوسوں اور مجالس کی سیکورٹی کیلیے مختلف مقامات پر اپنے فرائض سر انجام دیے۔ ترجمان پولیس کے مطابق پولیس کے سینئر افسران سمیت پولیس کے جوان اور خواتین پولیس اہلکاروں کی بھاری نفری کو بھی 8 محرم الحرام کے جلوسوں اور مجالس کی نگرانی کے لیے تعینات کیا گیا۔ اونچی عمارتوں پر بھی قانون نافذ کرنے والے اداروں کے اہلکار تعینات تھے۔ پولیس محرم الحرام کے جلوسوں اور مجالس میں شرکت کرنے والے عزاداروں کو مکمل سیکورٹی فراہم کر رہی ہے۔ آج ّ(پیر کو)کراچی میں 9 محرم الحرام کو نشتر پارک میں مجلس برپا ہوگی۔ مولانا شہنشاہ نقوی اہل بیت کے مصائب بیان کریںگے اور ان کی لازوال قربانیوں پر روشنی ڈالیںگے۔ جس کے اختتام کے بعد مرکزی جلوس برآمد ہو گا۔جلوس کے شرکا نماز ظہرین امام بارگاہ علی رضا پر ادا کریںگے۔  اس کے بعد جلوس مقررہ راستوں سے ہوتا ہوا حسینیان ایرانیان پر اختتام پذیر ہوگا۔