مزید خبریں

سیلزٹیکس:مرکزی تنظیم تاجران کا آج ملک گیرمظاہروں کا اعلان

اسلام آباد (نمائندہ جسارت) مرکزی تنظیم تاجران پاکستان کے صدر محمد کاشف چودھری نے بجلی کے کمرشل بلوں پر 3 سے 20 ہزار سیلزٹیکس کے ظالمانہ نفاذ کو مسترد کرتے ہو ئے ملک گیر سطح پر اگلے لائحہ عمل کی تشکیل کیلئے 30 جولائی کو تاجر تنظیموں کے عہدیداران کاہنگامی اجلاس طلب کر لیا ہے، جبکہ آج جمعہ کو ملک بھر کی مارکیٹوں میں احتجاجی مظاہرے کیے جا ئیں گے، ملک بھر میں 4 اگست کو بجلی کی تقسیم کار کمپنیوں کے دفاتر کے باہر احتجاجی کیمپ،دھرنے،مظاہرے کیے جائیں گے، یہ اعلان انہوں نے اسلام آباد میں تاجر رہنماؤں کے ہمراہ پر یس کانفر نس کر تے ہو ئے کیا۔ اس موقع پر مر کزی تنظیم تا جران پنجاب کے صدر شرجیل میر، شیخ سلیم، پرویز بٹ، طاہر تاج بھٹی، کامران عباسی،عتیق جنجوعہ، عمران بخاری، ملک عارف، عمران ملک، بلال نذیر، علی اصغر، غلام علی اور عمران شبیر بھی ان کے ہمراہ ہیں انھوں نے کہا بجلی کی ناقابل برداشت قیمت لوڈشیڈنگ کے عذاب کے بعد اب نئے سیل ٹیکس کا نفاذ تاجروں کا معاشی قتل ہے،ہم بجلی کا بل ادا کریں گے مگر سیلز ٹیکس ادا نہیں کریں گے،ملکی معیشت کو گرادب سے نکالنے کے لیے اس وقت میثاق معیشت کر نے کی ضرورت ہے، حکو مت کو ملکی معیشت کی بہتری کے لیے تاجروں کو اعتماد میں لے کر فیصلے کیے جا ئیں۔انھوں نے کہاحکمرانوں نے اگر یہ ٹیکس واپس نہ لیا تو ٹیکس ادائیگی روکنے سمیت ملک گیر شٹر ڈاون کا فیصلہ کریں گے۔