مزید خبریں

نیٹو طرز کے عرب اتحاد کا قیام ممکن نہیں ، مصر

قاہرہ (انٹرنیشنل ڈیسک) مصری وزیرخارجہ سامح شکری نے کہا ہے کہ مشرقِ وسطیٰ میں نیٹو طرز کے عرب عسکری اتحاد کے قیام کا امکان نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ عرب ممالک کے عسکری اتحاد کے قیام کی راہ میں سیاسی ، عسکری اور دیگر گمبھیر مسائل حائل ہیں۔ ا نہوں نے کہا کہ اس تناظر میں خلیجی کونسل میں اس طرح کے قیام کی تجویز پیش نہیں کی جائے گی۔ واضح رہے کہ اس سے قبل گزشتہ ماہ اسرائیلی میڈیا نے سعودی عرب، مصر، قطر،بحرین، اُردن، امارات اور اسرائیل کے اتحاد کادعویٰ کیا تھا ۔ گزشتہ ہفتے شاہ اردن نے صحافیوں کو بتایا کہ وہ مشرق وسطیٰ میں ایک ایسے فوجی اتحاد کی حمایت کریں گے، جو مغربی دفاعی اتحاد نیٹو کی طرز پر قائم کیا جائے۔ اسرائیلی وزیر دفاع بینی گینٹس نے بھی اپنے بیان میں کہا تھا کہ اسرائیل نے امریکی سربراہی میں قائم ہونے والے ایک اتحاد میں شمولیت اختیار کر لی ہے۔ اس اتحاد کو انہوں نے مڈل ایسٹ ائر ڈیفنس الائنس(ایم ای اے ڈی) کا نام دیا تھا۔ تاہم گینٹس نے یہ واضح نہیں کیا تھا کہ مشرق وسطیٰ کے دیگر کون کون سے ملک اس اتحاد میں شامل ہیں۔ فلسطینی حکام اور حماس کی جانب سے اس معاہدے کی مذمت بھی کی گئی تھی۔ فلسطینی صدر محمود عباس اور حماس کے رہنما اسماعیل ہنیہ نے آپسی اختلافات پس پشت ڈال کر ٹیلی فون پر گفتگو کی،جس کے بعد فلسطین نے متحدہ عرب امارات سے اپنا سفیر بھی فوری طور پر واپس بلانے کا اعلان کیا تھا۔