مزید خبریں

پاکستان میں پھلوں و سبزیوں کی سالانہ 68لاکھ ٹن پیداوار

فیصل آباد (اے پی پی) پاکستان میں پھلوں و سبزیوں کی سالانہ 68لاکھ ٹن پیداوار میں سے 5سے 8فیصد برداشت، 15سے 20فیصد ہینڈلنگ، 5سے10فیصد اسٹوریج اور 10سے 12فیصد پیداوارنقل وحمل کے دوران ضائع ہونے لگی ہے جبکہ ماہرین زراعت اور زرعی سائنسدانوں کے سروے کے مطابق آم، خوبانی اورآلو بخارہ میں 25،کھجور میں 35، سیب، آڑو،ترشاوہ پھلوں اور ناشپاتی میں 15اور دیگر پھلوں میں 24فیصد جبکہ آلو میں 15، پیاز میں 20، ٹماٹرمیں 40اور دیگر سبزیوں میں 30فیصد سے زائد بعدا زبرداشت نقصانات نوٹ کیے گئے ہیں جس کے تدارک کے لیے پوسٹ ہارویسٹ ریسرچ سنٹر کے زرعی سائنسدان کاشتکاروں کو پھلوں اور سبزیوں کے بعدا زبرداشت نقصانات میں کمی بارے جدید ٹیکنالوجی اور ان کی معیاری مصنوعات کی تیاری کے لیے مفت تربیت فراہم کررہے ہیں۔ پوسٹ ہارویسٹ ریسرچ سینٹر آری فیصل آباد کے ترجمان نے بتایاکہ ادارہ کے زرعی سائنسدان مختلف علاقوں میں جاکر مشروبات کی تیاری اور سبزیوں کوخشک کرنے کی جدید ٹیکنالوجی متعارف کروا رہے ہیں۔