مزید خبریں

صحافی پروٹیکشن آف جنرنلسٹس قانون سے متعلق آگاہی حاصل کریں،لالہ حسن

حیدرآباد(اسٹاف رپورٹر)سندھ پروٹیکشن آف جرنلسٹس اینڈمیڈیا پریکٹشنرز ایکٹ 2021ء کے ایک سال میں رولز واضح کرنا خوش آئند اقدام ہے’مذکورہ قانون سے صحافیوں کوپیشہ وارانہ ذمے داریوں میں درپیش مسائل کے حل، مختلف نوعیت کے مقدمات اور دھمکیوں کے خلاف قانونی تحفظ حاصل ہوگیا ہے،ضرورت اس بات کی ہے کہ مذکورہ قانون کے حوالے سے صحافیوں کو بھر پور آگاہی حاصل کرنی چاہیے۔پاکستان پر یس فائونڈیشن کی جانب سے حیدرآباد پریس
کلب میں سندھ پروٹیکشن آف جرنلسٹس اینڈمیڈیا پریکٹشنرز ایکٹ 2021 ء کے حوالے سے آگاہی ورک شاپ کا اہتمام کیاگیا۔اس موقع پر محکمہ انفارمشین سندھ حیدرآباد ریجن ڈپٹی ڈائریکٹر شہزاد شیخ، انفارمیشن ڈپٹی ڈائریکٹر بدین محمد یعقوب،صدر پریس کلب عبداللہ شیخ،سیکرٹری ایچ پی سی اقبال ملاح، ایچ یو جے صدر جے پرکاش، سینئر صحافی منصور مری اوردیگر نے شرکت کی۔اس موقع پر سینئر صحافی لالہ حسن پٹھان نے کہا ہے کہ دیگر صوبوں کی نسبت سندھ پروٹیکشن آف جرنلسٹس اینڈمیڈیا پریکٹشنرز ایکٹ 2021 کے ایک سال میں رولزواضح کرنا سندھ کے صحافیوں کے حقوق اور پیشہ وارانہ ذمے داریوں کے دوران دھمکیوں اور مقدمات کے خلاف قانونی جنگ لڑنے کے لیے اہم پیش رفت ہے،ضرورت اس بات کی ہے کہ مذکورہ قانونی کے حوالے سے صحافی سب سے پہلے خودباخبر ہو ں،انہیں مکمل طورپر آگاہی حاصل ہو کہ کس طرح مختلف نوعیت کی دھمکیوں اور مقدمات کے خلاف انہیں تحفظ حاصل ہے’انہوںنے کہاکہ مذکورہ قانون کے مطابق جہاں صحافی کو اپنی خبر کے ’’ذرائع‘‘ نہ بتانے کا تحفظ مل گیا ہے ۔