مزید خبریں

موجودہ حکومت صرف ایک ووٹ کے سہارے کھڑی ہے،حافظ حسین احمد

کوئٹہ(آن لائن) جمعیت علماء اسلام پاکستان کے مرکزی رہنما ممتاز پارلیمنٹرین حافظ حسین احمد نے کہا ہے کہ اسلامی جمہوریہ پاکستان کی پارلیمنٹ میں سودی نظام پر مشتمل بجٹ زیر بحث ہے جبکہ بدقسمتی سے اللہ اور رسولﷺ سے لڑائی میں حکومت میں شامل تمام پارٹیاں ’’سودی نظام‘‘ کے ساتھ ہیں۔وہ منگل کو اپنی رہائشگاہ جامعہ مطلع العلوم میں صوبہ سندھ سے آئے
ہوئے وفد اورمیڈیا سے گفتگو کررہے تھے۔ وفد میںساجد جمال سومرو، سعید احمد کربلائی، صحافی زاہد علی منگریو، میر ہالار خان بروہی او ر دیگر شامل تھے۔انہوںنے کہا کہ موجودہ حکومت صرف ایک ووٹ کے سہارے کھڑی ہے اور جمعیت علماء اسلام (ف) کے پندرہ ارکان اس کا حصہ ہیں لیکن وہ اپنی اس عددی برتری کو وزارتوں کے حصول کے لیے تو استعمال کرسکتے ہیں کاش وہ اس عددی برتری کو سودی نظام کے خاتمہ اور دیگر شرعی قوانین پر عملدرآمد کے لیے بروئے کار لاتے تو پھر نواز شریف کے دامن میں پناہ گزین بننے کا جواز بھی فراہم ہوسکتا تھا۔ انہوں نے کہا کہ ہمارا المیہ ہے کہ ہم دیگر سیاسی پارٹیوں کے لیے بیساکھی تو بن جاتے ہیں لیکن آپس میں ایک دوسرے کے اختلاف رائے کو برداشت کرنے کے لیے تیار نہیں ہیں ۔
حافظ حسین احمد