مزید خبریں

ملک پر مسلط امریکی غلاموں کو روس سے تیل خریدنے کی جرات نہیں،عمران خان

اسلام آباد (نمائندہ جسارت/خبر ایجنسیاں) پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی)کے چیئرمین اور سابق وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ یہ حکومت ملک کی بہتری کے لیے نہیں لائی گئی، ملک پر مسلط امریکی غلاموں کو روس سے تیل خریدنے کی جرات نہیں ، بھارت نے روس سے40فیصد سستا تیل خرید کر پیٹرول اور ڈیزل کی قیمت25روپے کم کردی، امریکا نے اپنی پالیسیوں پر عمل کرانے کے لیے ہم پر یہ حکومت مسلط کی ہے ، دوماہ میں جو مہنگائی ہوئی وہ 3 برس میں نہیں ہوئی۔پیر کو یہاں کسان کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے کہا کہ امید ہے کہ الیکشن جلد ہوں گے ، کسانوں کے حالات پر توجہ نہیں دی گئی تو فوڈ سیکورٹی کے مسائل ہوں گے، ملک میں زرعی شعبے میں بہتری کے بغیر ملکی فوڈ سیکورٹی خطرے میں ہے ،موجودہ حکومت ایک ایجنڈے کے تحت آئے ہیں، جو حکم واشنگٹن سے آئے گا و ہی ماننا ہے، روس یوکرین جنگ کی وجہ سے گندم درآمد متاثر ہوئی اور اسی جنگ کی وجہ سے کئی ممالک میں قحط سالی کا خدشہ ہے۔چیف الیکشن کمشنر حمزہ شہباز اور مریم صفدر سے احکامات لیتا ہے، یہ الیکشن کمیشن کو ساتھ ملا کر دھاندلی سے انتخابات جیتنا چاہتے ہیں، نیب کے اوپر شہباز شریف بیٹھ گیا ہے۔ موجودہ امپورٹڈ حکومت سے کوئی زیادہ توقعات نہیں ہیں ۔علاوہ ازیں جمعیت علمائے اسلام پاکستان کے سربراہ مولانا خان محمد شیرانی نے چیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان سے ملاقات کی ہے جس دونوں جماعتوں نے اتحاد و شراکت کا باضابطہ اعلان کرتے ہوئے باہمی مشاورت سے سیاسی و انتخابی حکمت عملی مرتب کرنے پر مکمل اتفاق کیا ہے۔ پیر کے روز تحریک انصاف کی جانب سے جاری اعلامیہ کے مطابق جمعیت علمائے اسلام پاکستان کے سربراہ مولانا خان محمد شیرانی کی قیادت میں وفد نے چیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان سے ملاقات کی۔ اعلامیہ کے مطابق جمعیت علمائے اسلام اور پاکستان تحریک انصاف کے مابین اتحاد و شراکت کا باضابطہ اعلان کیا گیا، دونوں جماعتوں کے مابین باہمی مشاورت سے سیاسی و انتخابی حکمت عملی مرتب کرنے پر مکمل اتفاق کیا ہے۔چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان نے کہا کہ ارفع مقاصد کے حصول کیلیے جدوجہد سیاست کا امتیاز ہے، اہل علم آگے بڑھیں اور قوم کی درست سمت میں رہنمائی کا فریضہ سرانجام دیں،دونوں جماعتوں کے مابین طے پانے والے معاملات کی کامیابی کیلیے دعاگو ہوں۔ اس موقع پر مولانا خان محمد شیرانی نے کہا کہ اسلاموفوبیا کے تدارک کیخلاف جدوجہد مشترکات میں سے ہے، سماج و سیاست سے جبر و نفاق کا خاتمہ اہم ضرورت ہے،دونوں جماعتوں کے مابین رفاقت کو باہمی روابط و مشاورت سے نتیجہ خیز ایجنڈے کی صورت میں ڈھالیں گے۔دوسری جانب بنی گا لہ میں چشتیاں بار ایسوسی ایشن کے وفد سے ملاقات کے دوران عمران خان نے کہا کہ ایک گھناؤنی سازش کے تحت ہماری حکومت کو ختم کرکے کرپٹ ٹولہ ملک پر مسلط کردیا گیا ہے